آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل21؍شوال المکرم 1440ھ 25؍جون 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن


پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے لاڑکانہ اور رتوڈیرو میں ایچ آئی وی سے متاثرہ افراد کے لئے مفت علاج کا اعلان کیا ہے۔

چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ سندھ حکومت ایچ آئی وی متاثرین کے زندگی بھر علاج کیلئےفنڈ قائم کرے گی،ہم ایچ آئی وی سے متاثرہ اپنے بھائیوں، بہنوں اور بچوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے۔ اسسے متاثرہ چاہے رتوڈیرو سے ہوں یا صوابی، سرگودھا اورتربت سے، میں ان کے ساتھ کھڑا ہوں۔

چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے سوشل میڈیا پر ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ رتوڈیرو میں ایچ آئی وی اسکریننگ کیمپ کا دورہ کیا ہے، ایچ آئی وی موت کا پروانہ نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ آگاہی کو پھیلا کر ایچ آئی وی کو ناکام بنانا ہوگا، ایچ آئی وی اور ایڈز دونوں کو ایک تناظر میں پیش کیا جارہا ہے۔

 بلاول  نے  کہا کہ ماضی میں ایچ آئی وی اور ایڈز کو خطرناک مرض سمجھا جاتا تھا،اب ایڈز اور ایچ آئی وی قابل علاج بیماری ہے۔

انہوں نے کہا کہ لاڑکانہ اور رتوڈیرو میں ایڈز کی وبا نہیں ہے۔ ایچ آئی وی وائرس کے پھیلنے کے حوالے سے میڈیا نے لوگوں میں خوف وہراس پیدا کیاہے۔

پی پی چیئرمین نے کہا کہ  بیماری کی زد میں آنے والوں کے لیے علاج کی سہولت پہنچانی ہوگی تا کہ اس بیماری کو پھیلنے سے روکا جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ بچوں کی بیماری کو سیاست کے لیے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔ معصوم بچوں کے نام اور تصاویر میڈیا پر نشراور شائع کی گئیں یہ کسی صورت بھی قابل قبول نہیں ہے ۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ مذہبی جماعتیں ہوں یا سیاسی ہمیں مل کر ایچ آئی وی کا مقابلہ کرنا ہے، کسی نے جان بوجھ کر ایچ آئی وی کو نہیں پھیلایا، ہماری کوشش ہے کہ اسکریننگ کو اور مؤثر کیا جائے۔

انہوں نے کہا کہ ایچ آئی وی سے متاثرہ بچوں کے حوالے سے متنازع بیان پر وفاقی وزیر کو ہٹایا جائے، ایچ آئی وی کا مسئلہ صرف سندھ کا نہیں پورے پاکستان کا ہے، متاثرہ بچوں کو اکیلا نہیں چھوڑ سکتے


Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں