آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ 9؍صفر المظفّر 1440ھ 19؍اکتوبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

6 کشمیریوں کی شہادت پر مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال، مظاہرین اور فورسز کے درمیان جھڑپیں

کراچی (نیوز ڈیسک ) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ سے 6 شہریوں کی شہادت کے بعد وادی میں مکمل ہڑتال رہی ،سرینگر، شوپیاں اور پلوامہ سمیت دیگر علاقوںمیں ہزاروں مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے جہاں قابض فورسز اور مظاہرین کے درمیان زبردست جھڑپیں بھی ہوئی ہیں،قابض حکام نے انٹرنیٹ اور موبائل سروس معطل کردی جبکہ جنوبی کشمیر کے کئی علاقوں کی ناکہ بندی کردی گئی اور کرفیو جیسی پابندیاں نافذ رہیں، سڑکیں سنسان رہیں جبکہ کشیدگی کے باعث اندرونی ریل سروس بھی متاثر ہوئی ہے، وادی میں امتحانات ملتوی کردیے گئے ہیں، پیر کےروز قابض فورسز نے پلوامہ میں سرچ آپریشن کے دوران ایک اور نوجوان کو بھی شہید کردیا جس کے بعد دو روز میں شہید کشمیریوں کی تعداد 7 ہوگئی ، قبل ازیں اتوار کی شب شوپیان ضلع میں حالات اُس وقت کشیدہ ہوگئے جب بھارتی فورسز نے فوجی کیمپ کے قریب ایک کار پر فائرنگ کرکے 6افراد کو شہید کردیا تھا، قابض فورسز نے حریت رہنما یٰسین ملک او ر ظفر اکبر بٹ سمیت کئی رہنمائوں کو گرفتار اور متعدد کو نظر بند کردیا ۔ دوسری جانب شوپیاں میں5 شہداء کی نماز جنازہ ادا کردی گئی جس میں ہزاروں افراد نے شرکت کی ، نماز جنازہ 6مرتبہ ادا کی گئی ، اس موقع پر حریت رہنما سید علی گیلانی نے جنازے کے شرکاء سے ٹیلی فونک خطاب کرتے ہوئےشہداء کے

عزم کو جاری رکھنے کا اعادہ کیا ، حریت رہنمائوں نے کل بھی وادی میں ہڑتال کا اعلان کردیا ہے ، دریں اثناء سرینگر میں تعینات بھارتی فوج کی 15ویں کور کے ترجمان کرنل راجیش کالیا نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے پوہو گاؤں میں فوج کے ایک قافلے پر فائرنگ کے بعد جوابی کارروائی میں ایک مشتبہ جنگجو کو ہلاک کردیا جس کی تحویل سے ایک رائفل بھی ملی۔کرنل کالیانے شہریوں کی شہادت کا بھی اعتراف کیا اور دعویٰ کیا کہ جوابی کارروائی میں سہیل، شاہد اور شہنواز نامی شوپیان کے ہی تین شہری مارے گئے جو جنگجوئوں کے سہولت کار تھے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں