آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات8؍صفر المظفّر1440ھ18؍ اکتوبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
 کراچی ( اسٹاف رپورٹر) پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ نجم سیٹھی نے دوٹوک اعلان کردیا کہ پاکستان سپر لیگ کا فائنل کراچی میں نہیں ہوگا تو کہیں نہیں ہوگا۔ غیر ملکی کرکٹرز بھی کھیلنے آئیں گے۔ نہیں آئے تو متبادل ہیں ہمارے پاس۔ ویسٹ انڈیز کا دورہ پاکستان یقینی ہے۔ ویسٹ انڈیز کی ٹیم یہاں 3 میچز کھیلے گی۔ کوشش مہمان ٹیم کراچی میں بھی ایک میچ کھیلے۔ یہ بات انہوں نے پیر کو نیشنل اسٹیڈیم کراچی کے دورے کے موقع پر میڈیا کےا ستفسار پر کہی۔خیال رہے کہ چند روز قبل جنگ نے یہ خبر شائع کی تھی کہ ویسٹ انڈین ٹیم یکم، دو اور چار اپریل کو پاکستان میں تین ٹی 20 انٹرنیشنل میچز کھیلے گی۔ پاکستان سپر لیگ کا فائنل کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم میں کھیلا جانا ہے۔ نجم سیٹھی نے فائنل میچ کے حوالے سے گراؤنڈ کی تزئین و آرائش کا جائزہ لیا۔ اس موقع پر اقبال قاسم، صلاح الدین صلو اور نیشنل اسٹیڈیم کے منیجر ارشد خان بھی موجود تھے۔ صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے نجم سیٹھی نے کہا کہ کراچی میں فائنل کے حوالے سے بار بار سوال نہ کریں۔ انہوں نے دو ٹوک انداز میں کہا کہ پی ایس ایل کا فائنل کراچی میں نہیں ہوگا توکہیں نہیں ہوگا۔ بعد ازاں پریس کانفرنس میں نجم سیٹھی کا کہنا تھا کہ نیشنل اسٹیڈیم میں کم وقت میں بہت زیادہ کام کیا ہے اور ہم نے 2 سال کا کام 4

ماہ میں مکمل کیا ہے جس کی مثال نہیں ملتی۔15 مارچ کو ایک بار پھر آکر نیشنل اسٹیڈیم کا معائنہ کروں گا۔ انٹرنیشنل سیکورٹی کمپنی نے رپورٹ آئی سی سی کو بھیجی ہے۔یہ رپورٹ مثبت ہے۔ غیر ملکی ماہرین کی یہ رپورٹ دنیا کے تمام بورڈز کو ارسال کی گئی ہے، جس کے تحت کراچی اور لاہور میں میچز کے لیے گرین سگنلز مل گیا۔ اس سال پی ایس ایل کی ساری فرنچائزز پاکستان آنے کو تیار ہیں۔ فائنل میچ کے ٹکٹ 15 مارچ سے فروخت کے لیے پیش کریں گے ۔ سب سے کم ٹکٹ کی قیمت ایک ہزار روپے اور سب سے زیادہ قیمت 12 ہزار روپے ہوگی۔ ایک سوال کے جواب میں نجم سیٹھی کا کہنا تھا کہ آن لائن ٹکٹ کا نظام دیکھ رہے ہیں ۔کوشش کریں گے کہ سب کو ٹکٹ ملیں۔دوسری جانب پاکستان سپر لیگ کے فائنل کے لیے پولیس نے ہدایت نامہ جاری کردیا ہے۔ ہدایت نامے میں کہا گیا ہے کہ فائنل کے دن کارساز روڈ کے اطراف تمام تجارتی مراکز، ہوٹلز اور دیگر دفاتر مکمل بند رکھے جائیں۔ پابندی کا اطلاق تھانا بہادر آباد کی حدود میں آنے والی تمام عمارتوں پر ہوگا اور خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں