آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات8؍صفر المظفّر1440ھ18؍ اکتوبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
اسلام آباد(بلال عباسی)انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج شاہ رخ ارجمند نے فیض آباددھرنا کیس میں تحریک لبیک کے سربراہ خادم حسین رضوی کو مفرور ملزم قرار دیتے ہوئے حکم دیا کہ اگر ملزمان 30 دن میں پیش نہ ہوئے تو انہیں اشتہاری قراردیاجائےگا،جبکہ کیس کی سماعت 19 مارچ تک ملتوی کردی گئی۔ پیر کو فیض آباد دھرنا کیس کی سماعت کے دوران پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ مولانا خادم حسین رضوی سمیت چار ملزمان کے خلاف مقدمات درج ہیں لیکن بار بار طلبی کے باوجود ملزمان عدالت میں پیش نہیں ہو رہے۔ اس دوران پراسیکیوٹر نے عدالت سے استدعا کی کہ ملزمان کو مفرور قراردیاجائے،اس کے باوجود عدم حاضری کی صورت میں اشتہار ٹھہرایا جائے،عدالت نے پراسیکیوٹر کی استدعا منظور کرتے ہوئے تحریک لبیک کے سربراہ مولانا خادم حسین رضوی، مولانا افضل قادری، مولانا عنایت اور شیخ اظہرکو مفرور ملزم قرار دے دیا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں