آپ آف لائن ہیں
بدھ5؍شوال المکرم 1439ھ 20؍جون2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
کراچی (اسٹاف رپورٹر )بحری قوت اور جنگی تیاریوں کے ایک شاندار مظاہرے کے دوران پاک بحریہ اور پاک فضائیہ نے پیر کو شمالی بحیرۂ عرب میں لانگ رینج اینٹی شپ کروز میزائل کا کامیاب تجربہ کیاہے۔ چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے ایئر چیف مارشل سہیل امان کے ہمراہ پاکستان نیوی کے بحری جہاز پی این ایس نصر سے لائیو ویپن فائرنگ کا شاندار مظاہرہ دیکھا۔ میزائل فائرنگ کا یہ مظاہر ہ پاکفضائیہ کے لڑاکا طیارے JF-17تھنڈر اور پاکستان نیوی کے جہاز پی این ایس سیف سے کیا گیا جو ایک کثیر المقاصد F-22Pفریگیٹ ہے۔ پاک بحریہ کے لاجسٹک سپورٹ جہاز پی این ایس نصر آمد پر چیف آف دی نیول اسٹاف نے سربراہ پاک فضائیہ کا خیر مقدم کیا۔ پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کی جانب سے میزائل فائرنگ کا یہ مشترکہ مظاہرہ بحری مشق رباط۔18کے اختتامی روز کیا گیا۔ اس بحری مشق کا بنیادی مقصد ابھرتے ہوئے کثیر الجہتی خطرات کے تناظر میں جنگی تصورات اور طریقہ کار کی جانچ کرنا تھا۔ مشق کا اہم ترین پہلو JF-17 Thunderکے ذیعے فضا سے سطح سمندر پر مار کرنے والے C-802 AK میزائل اور پی این ایس سیف سے سطح سمندر سے سطح سمندر پر مارکرنے والے C-802میزائل کی فائرنگ کا مظاہرہ تھا۔ دونوں پلیٹ فارمز سے فائر کیے جانے والے میزائلوں نے اپنے اپنے اہداف کو پوری کامیابی سے نشانہ

x
Advertisement

بنایا جو نہ صرف اس ویپن سسٹم کی افادیت کی واضح دلیل ہے بلکہ پاک بحریہ اور پاک فضائیہ کے مابین سمندر اور فضاء کے درمیان مشترکہ آپریشنز کی صلاحیت کا بھی منہ بولتا ثبوت ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں