آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل6؍ صفر المظفّر 1440ھ16؍اکتوبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
اسلام آباد (نمائندہ جنگ) ایوان بالا میں مختلف سیاسی جماعتوں کے ارکان نے کہا ہے کہ سمندر پار پاکستانیوں کو ووٹ کا حق ملنا چاہئے ، سیاسی پارٹیوں کی بیرون ملک سرگرمیوں سے متعلق قانون سازی کی جائے۔وزیر قانون و انصاف نے بتایا سپریم کورٹ نے سمندر پار پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے کیلئے نظام وضع کرنے کے سلسلے میں اپریل تک کا وقت دیا ہے ، سافٹ ویئر تیار کیا جا رہا ہے جو سپریم کورٹ میں پیش کیا جائیگا، اعظم سواتی نے تحریک پیش کی اور کہا کہ بیرون ملک پاکستانیوں کو ووٹ کے حق سے محروم کرناآئینی و قانونی زیادتی ہے، الیکشن کمیشن نے کردار ادا نہیں کیا،ہم یہ حق دلا کر رہیںگے۔ تاج حیدر نے کہا ڈیڑھ کروڑ بیرون ملک پاکستانیوں سے ووٹ کا حق بھی چھیننا چاہتے ہیں۔ عبدالقیوم نے کہا انکو دیا ہی نہیں گیا ہے ،پوسٹل ووٹنگ کے حق کیلئے حکومت کام کر رہی ہے۔ بیرسٹر سیف نے کہا سیاسی پارٹیوں کی اوورسیز سرگرمیاں ہیں انکو بھی زیر بحث لایا جانا چاہئے، سیاسی پارٹیاں بیرون ملک سیاسی سرگرمیاں کرتی ہیں، عطیات بھی لیتی ہیں بعض عہدیداروں نے وہاں شہریت بھی حاصل کر رکھی ہے اس حوالے سے قانون سازی ہونی چاہئے۔ وزیر قانون و انصاف محمود بشیر ورک نے کہا اصل معاملہ اس کام کیلئے طریقہ کار وضع کرنیکا ہے، سپریم کورٹ نے الیکشن کمیشن کو وقت دیا ہےکہ

نظام وضع کرے، اس بات پر بھی غور کیا جائے کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کیلئے کتنا بجٹ درکار ہوگا اور کس طرح ایکوائر کی جائینگی، سسٹم ہیک ہونے کا بھی خدشہ ہوتا ہے، ہمیں معاملات میں الجھنے کی بجائے انکو سلجھانا چاہئے ، پوسٹل بیلٹ بھی بھیجے جاسکتے ہیں اس میں بھی ایشوز ہیں۔ محسن عزیز نے تحریک پیش کی یہ ایوان ملک میں خواتین کی بڑی تعداد کو قومی شناختی کارڈز کے عدم اجراء معاملہ زیر بحث لائے، خواتین شناختی کارڈز نہ بنوانے کیوجہ سے ووٹ کے حق سے محروم رہتی ہیں، سحر کامران نے کہا12 ملین خواتین ووٹر نہیں ہیں۔وزیر مملکت داخلہ طلال چوہدری نے کہا ارکان پارلیمان بالخصوص خواتین ووٹرز کی رجسٹریشن کیلئے ہر طرح کی سہولیات فراہمی کیلئے تیار ہیں ،18 سال اور زائد کے مرد حضرات 63.87 اور 49.09 ملین خواتین اب تک ووٹر کے طور پر رجسٹرڈ کی گئی ہیں، مرد و خواتین میں 30 ملین کا گیپ ہے،2017ء میں 22 لاکھ سے زائد خواتین رجسٹر کی گئی ہیں،اسلام آباد میں مردوں کی تعداد 7 لاکھ 47 ہزار سے زائد اور خواتین پانچ لاکھ 70 ہزار سے زائد ہیں،بلوچستان میں اسلام آباد کی نسبت آبادی کے لحاظ سے زیادہ خواتین رجسٹر کی گئی ہیں،بلوچستان میں 44 ہزار 642 خواتین رجسٹر کی گئی ہیں، ارکان کو جس طرح کی سہولت اس سلسلے میں درکار ہے فراہم کرینگے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں