آپ آف لائن ہیں
جمعہ 7؍ شوال المکرم 1439ھ 22؍ جون2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ایگزیکٹ جعلی ڈگری کیس، ایف آئی اے کا رویہ یہی رہا تو سپریم کورٹ جائیں گے، جسٹس اطہرمن اللہ

اسلام آباد (نمائندہ جنگ) اسلام آباد ہائی کورٹ نے جعلی ڈگری کیس میں ایگزیکٹ کے چیف ایگزیکٹو شعیب شیخ و دیگر کی بریت کے خلاف ایف آئی اے کی اپیل کی سماعت 12مارچ تک ملتوی کر دی ہے۔ دوران سماعت عدالت عالیہ کے جسٹس اطہر من اللہ نے ایف آئی اے کی جانب سے سماعت ملتوی کرنے کی استدعا پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آخری موقع دے رہے ہیں ، آئندہ التواءنہیں ملے گا ، اگلی سماعت پر بھی یہی رویہ رہا تو معاملہ سپریم کورٹ کے نوٹس میں لائیں گے۔ عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل سے ایگزیکٹ کے حوالے سے سپریم کورٹ کے احکامات کی نقل بھی طلب کر لی ہے۔ جعلی ڈگری کیس ایگزیکٹ کے ملزمان کی بریت کے خلاف ایف آئی اے کی جانب سے دائر اپیل کی سماعت گزشتہ روز عدالت عالیہ کے جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب پر مشتمل ڈویژن بنچ نے کی۔ اس موقع پر وفاق کی جانب سے ڈپٹی اٹارنی جنرل راجہ خالد محمود ، ایف آئی اے کی جانب سے حامد علی شاہ ایڈووکیٹ کے ایسوسی ایٹ وکیل ، ملزمان کی جانب سے راجہ رضوان عباسی ایڈووکیٹ پیش ہوئے ، ملزمان کے ایک اور وکیل بابر اعوان مصروفیات کے باعث عدالت میں موجود نہیں تھے۔ سماعت شروع ہوئی تو ایف آئی اے کی جانب سے پرائیویٹ وکیل حامد علی شاہ ایڈووکیٹ کے ایسوسی ایٹ نے عدالت کو بتایا کہ سینئر وکیل سپریم کورٹ

x
Advertisement

میں مصروفیت کی وجہ سے پیش نہیں ہوئے لہٰذا کیس کی سماعت ملتوی کی جائے۔ اس پر جسٹس اطہر من اللہ نے ان سے استفسار کیا کہ سپریم کور ٹ کی جانب سے جاری حکم نامے کی کاپی کہاں ہے جس پر فاضل وکیل نے جواب دیا کہ کاپی میرے پاس موجود نہیں ہے۔ اس موقع پر عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل راجہ خالد محمود سے استفسار کیا تو انہوں نے کہا کہ وہ پہلے بھی دلائل دینے کے لئے تیار تھے اور آج بھی تیار ہیں ، صرف 15 منٹ کے دلائل ہیں۔ اس پر جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ آپ بے شک پورا دن لیں۔ فاضل جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ لگتا ہے ایف آئی اے اپنی اپیل کی پیروی میں سنجیدہ نہیں ، سپریم کورٹ نے معینہ مدت میں کیس نمٹانے کا حکم دیا ہے۔ بعد ازاں عدالت نے مذکورہ احکامات جاری کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔واضح رہے کہ اسلام آباد کی ماتحت عدالت نے ایگزیکٹ جعلی ڈگری کیس میں کمپنی کے چیف ایگزیکٹو شعیب شیخ اور دیگر ملزمان کو مقدمے سے بری کر دیا تھا جس کے خلاف ایف آئی اے نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں اپیل دائر رکھی ہے۔ ایگزیکٹ جعلی ڈگری کیس کے ملزمان کو بری کرنیوالے جج پرویز القادر میمن کو مذکورہ کیس میں پچاس لاکھ روپے رشوت لے کر بری کرنے کے اعتراف میں ملازمت سے برخاست کیا جا چکا ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں