آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل6؍ صفر المظفّر 1440ھ16؍اکتوبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
کراچی (جنگ نیوز) پاکستان مسلم لیگ (ن)، تحریک انصاف، جماعت اسلامی اور ایم کیو ایم (پاکستان) کے رہنمائوں نے اعتراف کیا ہے کہ سینیٹ کے انتخابات میں پیسہ چلا ہے۔ سابق وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ سینیٹ میں جہاں پیسہ چلا اور ووٹ خریدے گئے اس کا حساب کتاب ہونا چاہیے، جس کای ایک رکن بھی صوبے نہ ہو وہ امیدوار کھڑے کرےیہ دھاندلی ہے۔ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں جمہوریت کی نفی ہوئی اور خیبرپختونخوا میں بھی پیسہ چلا، ہمارے لوگ بھی بکے، رشوت لی اور دی گئی، چیف جسٹس معاملے کو دیکھیں۔ امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے سینیٹ کی فاٹا نشستوں ہونے انتخابات کو کالعدم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ سینیٹ انتخابات میں جہاں پیسہ چلا اور ووٹ خریدے گئے اس کا حساب کتاب ہونا چاہیے۔احتساب عدالت میں مختصر پیشی کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ جس کا ایک رکن بھی صوبے میں نہ ہو وہاں امیدوار کھڑا کرے، یہیں سے دھاندلی لگتی ہے جبکہ ہمارے سینیٹرز نے نشان کے بغیر الیکشن لڑا ۔نواز شریف نے کہا کہ سینیٹ الیکشن میں پیسے کے کھیل کو دفن کرنا چاہتے ہیں، اس بارسینیٹ میں کھلے عام سب کچھ ہوا، کسی پارٹی کو حق نہیں پہنچتا کہ صوبے میں ایک رکن نہ ہو

اور وہ سینیٹ کے لیے امیدوار کھڑے کردے۔ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے اعتراف کیا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں خیبرپختونخوا کے ہمارے لوگ بھی بکے ہیں۔ کراچی میں ایک سوال کے جواب میں عمران خان کا کہنا تھا کہ سینیٹ الیکشن میں جمہوریت کی نفی ہوئی ہے اور پیسہ چلا ہے، افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ خیبرپختونخوا کے لوگوں پر بھی پیسہ چلا اور کئی لوگوں نے اپنے آپ کو بیچا، رشوت دی بھی گئی اورلی بھی گئی، پتا ہے رشوت کس نے دی، بدقسمتی سے رشوت لینے کا ثبوت نہیں، ہمارے کون کون سے لوگ بکے اس پر پرویز خٹک سے بات ہوئی ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں