آپ آف لائن ہیں
بدھ5؍شوال المکرم 1439ھ 20؍جون2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
لندن( نیوز ڈیسک) طوفان ایمااور برفباری کی تباہکاری کے بعد اب پانی کے بحران نے وسیع علاقوں کو لپیٹ میں لے لیا ہے ۔یورو نیوز کے مطابق بڑی مقدار میں برف پگھلنے کی وجہ سے متعدد علاقوں میں پانی فراہم کی جانے والی لائنیں پھٹ گئی ہیں جس کی وجہ سےویلز اورسائوتھ ایسٹ انگلینڈ میں ہزاروں افراد پانی کی بوند بوند کوترس رہے ہیں، لوگوں سے ممکنہ حد تک کم پانی استعمال کرنے کی اپیل کی جارہی ہے،کینٹ کے علاقے میں 5ہزار مکان پانی سے محروم ہیں،ویلز میں بھی ہزاروں مکان پانی کی قلت سے دوچار ہیںاورکم وبیش1200مکان راتوں رات پانی سے محروم ہوگئے،سائوتھ ایسٹ انگلینڈ میں پانی فراہم کرنے والی فرمز انتہائی ضرورت مند لوگوں کاپتہ چلا کر انھیں پانی کی بوتلیں فراہم کررہی ہیں،مڈلینڈزا ورسکاٹ لینڈ کے بعض علاقوں میں بھی پانی کی فراہمی میں تعطل پڑرہاہے،اتوار کو لندن کے کم وبیش20ہزار گھروں کوپانی کی فراہمی ممکن نہیں ہوئی،پانی کی فراہمی بند ہونے کی وجہ سے دارالحکومت لندن اورکینٹ میںبہت سے سکولوں نے پیر کو بچوں کو چھٹی دیدی،سدرن واٹر کاکہناہے کہ وہ سٹنگ بائورن اور کینٹ میں پانی کی فراہمی بحال کرنے کی کوشش کررہی ہے۔کینٹ، سسیکس، ہیمپشائر وار آئیلے آف وہائٹ کو پانی فراہم کرنے والی کمپنیوں کاکہناہے کہ وہ کونسلوں اور ایمرجنسی سروسز کے

x
Advertisement

تعاون سے پانی کی قلت سے بری طرح متاثرہ افراد کاپتہ چلاکر انھیں پانی فراہم کرنے کی کوشش کررہی ہیں۔ویلش واٹر نے کم وبیش6ہزار صارفین کو پانی فراہم نہ کرسکنے کااعتراف کیاہے۔اور72گھنٹوں کو چیلنجنگ قرار دیا ہے ۔سیون ٹرینیٹ نے نارتھ ڈربی شائر اور قرب وجوار کے لوگوں کو پانی فراہم نہ کرسکنے پر معذرت کی ہے،کمبریا میں خوراک کی قلت سے نمٹنے اور خوراک کی سپلائی پہنچانے کیلئے رائل ایئر فورس کے طیارے طلب کرلئے گئے ہیں جو دور دراز کی کمیونٹیز کو کوئلہ ،لکڑی اور بجلی کے ہیٹر فراہم کررہے ہیں ،دوسری جانب طوفان ایماکے بعد برف پگھلنا شروع ہونے کے بعد بھی برفباری اور سڑکوں پر برف جمی رہنے کی وارننگ اب بھی برقرار ہے، سفر کرنے والوں کو متنبہ کیاگیاہے کہ ملک کے مختلف علاقوں میں درجہ حرارت میں اضافہ شروع ہونے کے باوجود مزید برفباری ہوسکتی ہے۔ جبکہ جنوب میں برف پگھلنا شروع ہونے کے بعد بتدریج جمادینے والی سردی کے خاتمے کی امید پیدا ہوگئی ہے، جبکہ طوفان ایما سے ہونے والی تباہکاری کے سبب بعض حصے متاثر رہیں گے،ماہرین موسمیات کے مطابق نئے ہفتہ کےآغاز کے ساتھ ہی زیادہ تر علاقوں میں موسم بتدریج معمول پر آتاچلاجائے گا،جبکہ سائوتھ ویسٹ کے بالائی علاقوں میں درجہ حرارت 9درجہ سینٹی گریڈ تک رہنے کاامکان ہے۔جبکہ شمالی انگلینڈ اور سکاٹ لینڈ نقطہ انجماد کی صورت حال سے نکلنے کی کوشش کررہاہے، دوسری جانب تیز ہوائوں اورخون جمادینے والی بارش کی وجہ سے ہزاروں گھر بجلی سے محروم ہیں۔گزشتہ روز بھی محکمہ موسمیات نے شمالی انگلینڈ اورسکاٹ لینڈ کے بعض حصوں میںمزید برفباری ہونے اور رات کو درجہ حرارت منفی 3-4 سینٹی گریڈ رہنے کی پیش گوئی کی تھی۔ابھی تک پورےجنوبی علاقے میں بڑی مقدار میں برف موجود ہے اس کو پگھلنے اور درجہ حرارت معمول پر آنے میں کچھ وقت لگے گا۔ آر اے سی کا کہناہے کہ سڑکوں پر وسیع علاقے میں ڈرائیونگ کی صورتحال اب بھی انتہائی مشکل اور خطرناک ہے۔ ڈرائیوروں کو گاڑی چلاتے ہوئے محتاط رہنے کی ہدایت کی گئی ہے ۔ تاہم بعض سڑکوں کوجنھیں آمدورفت کیلئے بند کردیاگیاتھا انھیں دوبارہ کھول دیاگیا ہے ۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں