آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعرات8؍صفر المظفّر1440ھ18؍ اکتوبر 2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

چوہدری محمد سرور کی کامیابی برطانوی پاکستانیوں کیلئے باعث فخر ہے، کمیونٹی رہنما

لوٹن ( ش ع) سینیٹ پاکستان کے الیکشن میں برطانیہ کے ممتاز پاکستانی نژاد سیاستدان چوہدری محمد سرور کی کامیابی پر لوٹن کی متعدد پاکستانی کشمیری سیاسی جماعتوں کے رہنمائوں اور برطانوی سیاست میں شریک شخصیات نے بھی قطع نظر جماعتی وابستگیوں کے مثبت ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ جنگ سروے میں متعدد شخصیات نے کہا کہ چوہدری محمد سرور کے سینیٹر بننے سے تمام اوورسیز پاکستانی کشمیری یہ سمجھتے ہیں کہ اب ہماری ایک موثر آواز پاکستان کی سینیٹ میں پہنچی ہے۔ سابق میئر لوٹن لیبر کونسلر حلقہ سینیٹ لوٹن بارو اور سابق جنرل سیکرٹری مسلم کانفرنس برطانیہ محمد ریاض بٹ نے کہا کہ چوہدری محمد سرور ایک دیانتدار سیاسی شخصیت ہیں، ان کی کامیابی خوش آئند ہے۔ تحریک کشمیر برطانیہ کے سینئر نائب صدر چوہدری محمد شریف نے کہا کہ چوہدری محمد سرور برطانیہ کی عملی سیاست سے گزرے ہیں اور وہ یقیناً یہاں کے سیاسی تجربات کو بروئے کار لاکر پاکستان میں بہتر کردار ادا کرنے کی پوزیشن میں ہیں۔ پی ٹی آئی برطانیہ کے رہنما کامران بٹ نے کہا کہ دہری خوشی ہے کہ تحریک انصاف کے ٹکٹ پر چوہدری محمد سرور جوکہ برطانیہ کے پاکستانی اوریجن رہنما ہیں، کامیاب ہوئے، پاکستان مسلم لیگ ن آزاد کشمیر برطانیہ کے رہنمائوں راجہ افتخار کھتیاڑوی اور شاہد زمان سرہوٹوی نے کہا

کہ وہ جماعتوں کی سیاست سے بالاتر ہوکر ایک برٹش پاکستانی کی کامیابی کا خیرمقدم کرتے ہیں اور کہا کہ اگر زبیر گل بھی جیت جاتے تو اوورسیز پاکستانی کشمیری کمیونٹی کی آواز مزید موثر ہوجاتی۔ لیبر پارٹی کے متحرک کارکن چارٹرڈ اکائونٹنٹ اسرار بٹ نے بھی چوہدری محمد سرورکی کامیابی کو ویلکم کیا۔ کشمیر پی ٹی آئی کے چوہدری آصف پنوں، پی پی کے ظاہر چوہدری نے کہا کہ چوہدری محمد سرور کی کامیابی سے امید ہے کہ اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل اب بہتر انداز میں اٹھائے جاسکتے ہیں۔ پی پی کے لالہ چوہدری محمد تاج سمروڑ نے کہا کہ چوہدری محمد سرور کی کامیابی سے پاکستانی کشمیری ڈائسفرا کو دلی خوشی ہے۔ سروے میں ایک پاکستانی نے کہا کہ اگر زبیر گل بھی جیت جاتے تو بھی ہمیں خوشی ہوتی، مگر افسوس کہ ن لیگ نے میاں برادران کے مشکل وقت کے ساتھی کی قدر نہیں کی۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں